پھر وہی تنہائی کا کمبل اور قومی شناختی کارڈ..اسداللہ غالب

پھر وہی تنہائی کا کمبل اور قومی شناختی کارڈ..اسداللہ غالب میںنے تو کمبل سے جان چھڑانے کی کوشش کی تھی، مگر مصیبت یہ ہے کہ کمبل میری جان نہیں چھوڑتا۔ تنہائی کاذکر چھڑا تو عمرعیار کی زنبیل کی طرح دراز مزید پڑھیں