پاکستان میں سیکورٹی اورمعاشی صورتحال کی بہتری کے لئے کیا کچھ ہونے جارہا ہے ۔۔۔۔آ پ بھی جانیئے

اسلام آباد(پی ایف پی)پاکستان میں سیکورٹی اورمعاشی صورتحال کی بہتری کی وجہ سے دنیا کے سب سے بڑے پراپرٹی کے پلیٹ فارم سٹی سکیپ نے پہلی مرتبہ پاکستان پویلین بنانے کی اجازت دےدی ہے۔ اس سلسلے میں ایک معاہدے پر دستخط کردئیے گئے ہیں۔تفصیلات کے مطابق دنیا بھر میں پراپرٹی کے سب سے بڑے اور معتبر ادارے نے پاکستان کی بہتر ہوتی معاشی و سیکورٹی صورتحال کو دیکھتے ہوئے منگل کو پاکستان کی کمپنی ماس کام سلوشنز کے ساتھ ایک معاہدے پر دستخط کئے ہیں جس کے تحت پاکستان کے رئیل اسٹیٹ سیکٹر میں بین الاقوامی سرمایہ کاری بڑھانے اور بیرون ملک رہنے والے پاکستانیوںکو پاکستان کی طرف راغب کرنے کے لئے دنیا کے آٹھ ممالک میں منعقد ہونے والی نمائشوں میں پاکستان کےلئے خصوصی پویلین بنائے جائیں گے جبکہ پاکستانیوں کو متوجہ کرنے کےلئے اشتہار ی مہم بھی چلائی جائے گی۔
سٹی سکیپ کے ڈائریکٹروالٹر نے بتایا کہ سٹی سکیپ دبئی ،دوحہ ،کویت ،ابوظہبی ،جدہ ،استنبول،مصراورسئیول میں پراپرٹی کی نمائشوں کا انعقاد کرتی ہے جو ساری دنیا کی سب سے بڑی نمائشیں ہیں،اس کے علاوہ بین الاقوامی کانفرنس اور پراپرٹی ایوارڈ ز کاانعقاد بھی کیا جاتا ہے۔اسی طرح پراپرٹی سیکٹر پر معروف میگزین بھی شائع کیا جاتا ہے جبکہ پراپرٹی پر سٹی سکیپ کی رپورٹ دنیا بھر میںمعتبر سمجھی جاتی ہیں۔انہوں نے بتایا کہ پاکستان رئیل اسٹیٹ سیکٹر کی مقبولیت بین الاقوامی سیکٹر میں تیز ی سے بڑھ رہی ہے اور دنیا بھر کے سرمایہ کار پاکستان کے رئیل اسٹیٹ سیکٹر میں سرمایہ کاری کر نے کے خواہاں ہیں۔اس لئے سٹی سکیپ نے پاکستان کی سب سے بڑی ایونٹ منیجمنٹ کمپنی ماس کام سلو شنز سے معاہد ہ کیا ہے جس کے تحت ماس کام سلوشنز آئندہ پانچ سال تک سٹی سکیپ کے ساتھ کام کرے گی۔
متحدہ عرب امارات میں پاکستانی سفارتخانہ کے ابوظہبی میں کمرشل سیکشن کے انچارج حبیب احمد نے اپنے پیغام میں کہا کہ دنیا کے سب سے بڑے پراپرٹی ایونٹ سٹی سکیپ گلوبل کی طرف سے پاکستان پویلین بنانے کا معاہدہ انتہائی اہمیت کا حامل ہے اور اس سے پتہ چلتا ہے کہ دنیا کا پاکستان پر اعتماد بڑھ رہاہے۔
اس موقع پر ماس کام سلوشنز کے سربراہ قمر چوہدری نے بتایاکہ پاکستان میں ہاؤسنگ اورتعمیراتی شعبے کی ترقی کے وسیع مواقع موجود ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کو 65لاکھ رہائشی یونٹس کی کمی کا سامنا ہے جبکہ ترقی کرتی ہوئی معیشت کے لئے انفراسٹرکچر میں سرمایہ کاری بڑی اہمیت کی حامل ہے۔سٹی سکیپ کے معاہدے سے بین الاقوامی سرمایہ کاروں کو پاکستان میں سرمایہ کاری کے مواقع سے آگاہی پیدا ہوگی اور انھیں مقامی شراکت دار میسر آئیں گے۔جبکہ بیرونی ممالک مقیم پاکستانیوں کو اپنے ملک میں گھر،فلیٹ اور کمرشل پراپرٹی خریدنے میں آسانی ہوگی۔انہوں نے بتایا کہ انھیں امید ہے پاکستان کے رئیل اسٹیٹ سیکٹر میںسالانہ کئی ارب ڈالرز کی سرمایہ کاری ہوگی ،خاص طور پر گوادرمیں بیرونی سرمایہ کاری کے بڑے مواقع موجود ہیں۔قمر چوہدری نے بتایا کہ پاکستان میںسیکیورٹی صورتحال میں بہتری اور معاشی ترقی کی رفتارتیز ہونے سے بیرونی سرمایہ کاروں کے لئے پاکستان بڑی منافع بخش مارکیٹ بن گئی ہے۔ضرورت اس امر کی ہے کہ حکومت بیرونی سرمایہ کاروں کو مکمل ملکیت میں زمین خریدنے کی اجازت دے اور ویزا اجرائکے عمل کو تیز تر کیا جائے۔

Leave your vote

0 points
Upvote Downvote

Total votes: 0

Upvotes: 0

Upvotes percentage: 0.000000%

Downvotes: 0

Downvotes percentage: 0.000000%

اپنا تبصرہ بھیجیں