کشمیر میں تشدد کی تازہ لہر تشویشناک ہے ، امریکہ

واشنگٹن / نیویارک (پی ایف پی) مقبوضہ کشمیر میں تشدد کی تازہ لہر پر امریکہ سمیت اقوام متحدہ نے گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ پائیدار دوستی اور تعلقات میں بہتری کے لئے پاکستان اور بھارت فوری مذاکرات بحال کریں ۔
بھارتی میڈیا کے مطابق امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ کشمیر میں تشدد کی تازہ لہر انتہائی باعث تشویش ہے انہوں نے کہا کہ تشدد آمیز واقعات جہاں بھی رونما ہوتے ہوں باعث تشویش ہوتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ اوبام انتظامیہ کشمیر سمیت تمام مسائل کو حل کرنے کے لئے باہمی طور پر مسائل کو ایڈریس کرنے کے اپنے موقف پر قائم ہے تاکہ اگر دونوں ممالک یقینی طور پر مسئلہ کشمیر پر امریکہ کی براہ راست مدد لینا چائیں گے تو امریکہ اس کے لئے بھی تیار ہو گا ۔
انہوں نے کہا کہ امریکہ پاکستان اور بھارت دونوں ممالک کے ساتھ اپنے تعلقات کو فروغ دینا چاہتا ہے۔ ادھر اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل بانکی مون کے ترجمان نے بھی کشمیر میں تشدد کی تازہ لہر پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ تشدد سے کچھ حاصل نہیں ہو گا لہذا دونوں ممالک کو مسئلہ کشمیر سمیت دیگر تمام باہمی مسائل کو حل کرنے کی کوشش کرنا ہو گی ۔انہوں نے واضح کر دیا ہے کہ دونوں ممالک کو آپسی طور پر مسئلہ کشمیر کا حل نکالنا ہو گا ہم ان کا کہنا تھا کہ ہندوپاک کی درخواست پر ہی اقوام متحدہ کوئی ثالثی کر سکتا ہے
ترجمان کا کہنا تھا کہ اگر بھارت اور پاکستان اس بات کے لئے تیار ہو جائیں تو اقوام متحدہ کشمیر مسئلے کے حتمی حل کے لئے اپنے رول کو ادا کرنے کے لئے تیار ہے ۔بھارت اور پاکستان کے درمیان جاری تناﺅ کی صورت حال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ نئی دلی اور اسلام آباد کو فوری طور ایسے اقدامات اٹھائے جانے چانے چاہیں جن سے تناﺅ کی جو موجودہ صورت حال ہے اس کا خاتمہ ہو ۔

Leave your vote

0 points
Upvote Downvote

Total votes: 0

Upvotes: 0

Upvotes percentage: 0.000000%

Downvotes: 0

Downvotes percentage: 0.000000%

اپنا تبصرہ بھیجیں