پاکستان اور افغانستان کے مابین مضبوط برادرانہ تعلقات قائم کئے جائیں،آفتاب شیرپاؤ

پاکستان اور افغانستان کے مابین مضبوط برادرانہ تعلقات قائم کئے جائیں،آفتاب شیرپاؤ
بعض دشمن عناصر دونوں ممالک کے درمیان بدامنی چاہتے ہیں ، ان کی یہ کوششیں کبھی بھی کامیاب نہیں ہوسکیں گی
مرکزی حکومت کی غیر منصفانہ رویئے سے چھوٹے صوبوں کے عوام میں احساس محرومی پائی جارہی ہے جو ایک مضبوط وفاق کیلئے خطر ناک ثابت ہوسکتا ہے،مرکز چھوٹے صوبوں کا استحصال بند کرے ،شمولیتی جلسے سے خطاب

پشاور(پی ایف پی) قومی وطن پارٹی کے مرکزی چیئرمین آفتاب احمد خان شیرپاؤ نے پاکستان اور افغانستان کے مابین مضبوط برادرانہ تعلقات پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ دونوں ممالک کے لوگ مذہبی، سماجی اور ثقافتی رشتوں میں جڑے ہوئے ہیں جس کو کبھی بھی نظر انداز نہیں کیا جاسکتا۔ ان خیالات کا اظہارانہوں نے حلقہPk-26 تخت بھائی ضلع مردان میں ایک بڑے شمولیتی جلسے سے خطاب کے دوران کیا۔اس موقع پر گاؤں بہلولہ تخت بھائی کے احسان اللہ خان،رحیم اللہ ممبر، لال گل مہمند، یوتھ کونسلر، صدام خان، ملک آفتاب الدین، زرشاد خان، جھانگیر خان، حاجی سید پرویز علی شاہ، سابقہ امیدوار PK-26جعفر خان، حاجی عالم زیب، شہریار خان گجر، ابراہیم خان گجر ، شیخ خورشید اقبال اور دیگر نے اپنے سینکڑوں ساتھیوں اور خاندانوں سمیت مختلف سیاسی پارٹیوں سے مستعفی ہوکر قومی وطن پارٹی میں شمولیت اختیار کی اور ملی رہبر آفتاب احمد خان شیرپاؤ کی قیادت پر مکمل اعتماد کا ظہار کیا۔آفتاب شیرپاؤ نے واضح کیا کہ پاکستان اور افغانستان کے درمیان اچھے تعلقات پورے خطے میں امن کیلئے ناگزیر ہیں اوراچھے تعلقات سے ہی امن اور تجارت کو فروغ ملے گا۔انہوں نے کہا کہ بعض دشمن عناصر دونوں ممالک کے درمیان بدامنی چاہتے ہیں لیکن ان کی یہ کوششیں کبھی بھی کامیاب نہیں ہوسکیں گی۔انہوں نے کہا ہم افغان مہاجرین کی باعزت واپسی چاہتے ہیں تاکہ کئی دھائیوں کی مہمان نوازی کو دشمنی اور تلخی میں بدلنے سے روکا جاسکے۔انہوں نے کہا کہ قومی وطن پارٹی نے ہمیشہ برادرانہ تعلقات کے لئے کوشش کی ہے۔آفتاب شیرپاؤ نے مر کزی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ مرکزی حکومت کی غیر منصفانہ رویئے سے چھوٹے صوبوں کے عوام میں احساس محرومی پائی جارہی ہے جو ایک مضبوط وفاق کیلئے خطر ناک ثابت ہوسکتا ہے۔انہوں نے مطالبہ کیا چھوٹے صوبوں کو ان کے وسائل پر اختیار دیا جائے اور تمام ترقیاتی منصوبوں میں ان کو بھر پور حصہ دیا جائے تاکہ پورے ملک میں یکساں ترقی ممکن ہوسکے ۔اپنے خطاب میں آفتاب شیرپاؤ نے کہا کہ مرکزی حکومت چھوٹے صوبوں کا استحصال بند کرے اورخیبر پختونخوا کو سی پیک کے ترقیاتی منصوبوں میں کئے گئے وعدوں کے مطابق حصہ دیا جائے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پورے ملک میں جلد از جلد مردم شماری کا انعقاد کیا جائے جس کو بنیاد بناکر آئندہ کے لئے ترقیاتی سکیموں کی منصوبہ بندی کی جاسکے اور مردم شماری ہی سے ملکی وسائل کی منصفانہ تقسیم ممکن ہوسکے گی اور چھوٹے صوبوں میں پائی جانے والی محرومیوں کا ازالہ ممکن ہوسکے گا۔ جلسے سے قومی وطن پارٹی کے صوبائی چیئرمین اور سینئر وزیر سکندر حیات خان شیرپاؤنے بھی خطاب کیا اور کہا کہ قومی وطن پارٹی پختون قوم کی امنگوں کی ترجمان ہے، اوراس وقت پوری پختون قوم کی نگاہیں صرف قومی وطن پارٹی پر مرکوز ہیں۔ صوبے بھر سے لوگوں کی جوق در جوق شمولیت اس بات کی عکاس ہے کہ قومی وطن پارٹی ہی وہ واحد جماعت ہے جو پختونوں اور صوبے کو درپیش مسائل سے چھٹکارا دلا سکتی ہے۔ سینئرصوبائی وزیر نے پارٹی میں نئے شامل ہونے والوں کو خوش آمدید کہتے ہوئے کہا کہ صوبہ کی تعمیر و ترقی اور پختونوں کی خوشحالی کیلئے مشترکہ جدوجہد کی جائے گی اور اس سلسلے میں کوئی دقیقہ فروگذاشت نہیں کیا جائے گا اس موقع پر سلطان محمد خان ایم پی اے، سلیم خان ایڈوکیٹ، مردان کے ضلعی چیئرمین شاد علی خان اور دیگر ضلعی اور مقامی عہدیدار بھی موجود تھے

Leave your vote

0 points
Upvote Downvote

Total votes: 0

Upvotes: 0

Upvotes percentage: 0.000000%

Downvotes: 0

Downvotes percentage: 0.000000%

اپنا تبصرہ بھیجیں