طیارہ تباہ کرنے کا واقعہ: ترکی کی روس سے معافی

ماسکو(پی ایف پی) روسی صدر ولادی میر پیوٹن کے ترجمان کا کہنا ہے کہ ترک صدر رجب طیب اردگان نے، شامی سرحد پر روسی طیارے کو گرائے جانے کے واقعے پر روس سے معافی مانگ لی۔

امریکی خبر رساں ایجنسی ’اے پی‘ کے مطابق روسی صدر کے ترجمان دیمیتری پیسکوو نے صحافیوں کو بتایا کہ ولادی میر پیوٹن کو رجب طیب اردگان کا پیغام ملا، جس میں انہوں نے واقعے پر معذرت کرتے ہوئے ہلاک ہونے والے پائلٹ کے لواحقین سے ہمدردی اور تعزیت کی۔

واضح رہے کہ گزشتہ سال نومبر میں ترکی نے مبینہ طور پر سرحدی حدود کی خلاف ورزی پر شامی سرحد پر روسی جنگی طیارہ ’سو 24‘ مار گرایا تھا۔

روس نے طیارے گرائے جانے پر شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے ترکی سے معافی کا مطالبہ کیا تھا، تاہم معافی نہ مانگے جانے پر روس نے دوطرفہ تجارتی اور سیاحتی تعلقات ختم کردیے تھے۔

روس کی حکومت کی جانب سے طیب اردگان کے خط کا متن جاری کیا گیا، جس میں ترک صدر کی جانب سے کہا گیا کہ ’میں طیارہ واقعے میں ہلاک ہونے والے روسی پائلٹ کے اہلخانہ سے ہمدردی اور تعزیت کا اظہار کرتا ہوں اور واقعے پر معافی مانگتا ہوں۔‘

روسی صدر کے ترجمان نے رجب طیب اردگان کا حوالہ دیتے ہوئے مزید کہا کہ ترک صدر دہشت گردی کے خلاف جنگ اور علاقائی مسائل حل کرنے کے لیے روس سے تعاون کرنے کو تیار ہیں۔

قبل ازیں ترک وزیر اعظم بن علی یلدرم نے کہا تھا کہ روس سے تعلقات سے متعلق کئی حوالوں سے پیشرفت ہوئی ہے، لیکن انہوں نے اس کی تفصیلات نہیں بتائی تھی۔

Leave your vote

0 points
Upvote Downvote

Total votes: 0

Upvotes: 0

Upvotes percentage: 0.000000%

Downvotes: 0

Downvotes percentage: 0.000000%

اپنا تبصرہ بھیجیں