صوبائی دارلحکومت میں حضرت علیؓ کے یوم شہادت کے موقع پر سکیورٹی کے انتظامات کیا ہونگے جائیے

لاہور (پی ایف پی) حضرت علیؓ کے یوم شہادت کے موقع پر نکلنے والے مرکزی جلوس کے روٹ، فول پروف سکیورٹی کے انتظامات سمیت دیگر امن وامان کی صورتحال کو کنٹرول کرنے سمیت منصوبہ بندی تشکیل دے دی گئی ہے۔ ڈی آئی جی آپریشن ڈاکٹر حیدر اشرف نے کہا ہے کہ اندرون شہر سے برآمد ہونے والے مرکزی جلوس کی سکیورٹی کے لئے5ہزار اہلکارتعینات کیے گئے ہیں۔ جبکہ روٹ میں آنے والے 90مقامات پر سی سی ٹی وی کیمرے نصب کیے گئے ہیں۔ انہوں نے مزیدکہا کہ حکومت پنجاب سے فضائی نگرانی کے لئے7ہیلی کاپٹر مانگے ہیں-
انہوں نے کہا کہ وزارت داخلہ کو درخواست دی گئی ہے کہ حضرت علیؓ کے یوم شہادت کے موقع پر اندرون شہر سے نکالے جانے والے مرکزی جلوس کے روٹ پر موبائل فون سروس کو معطل کردیا جائے۔ ڈی آئی جی آپریشنز نے بتایا کہ سکیورٹی معاملات کو فول پروف بنانے کے لئے شاہدرہ سے گجومتہ جانے والی میٹرو بس سروس کو گجومتہ سے ایم اے او کالج تک محدود کردیا گیا ہے۔ ڈی آئی جی ڈاکٹر حیدر اشرف نے یہ بھی بتایا ہے کہک مرکزی جلوس کے راستے میں آنے والے18مقامات کو حساس قرار دیتے ہوئے کنیٹینرز لگاکر بند کردیا جائے گا اورکنیٹینرز کو ایک روز قبل لگاکر بند کردیاجائے گا۔ ٹریفک کی روانی کے حوالے سے چیف ٹریفک آفیسر طیب حفیظ چیمہ نے بتایا کہ حضرت علیؓ کے یوم شہادت کے موقع پر 1400وارڈنز 3شفٹوں میں خدمات سرانجام دیں گے۔

Leave your vote

0 points
Upvote Downvote

Total votes: 0

Upvotes: 0

Upvotes percentage: 0.000000%

Downvotes: 0

Downvotes percentage: 0.000000%

اپنا تبصرہ بھیجیں