زرعی شعبے میں ریلیف مراعات پر عملدرآمد شروع

اسلام آباد (پی ایف پی) وفاقی حکومت کی جانب سے بجٹ میں اعلان کردہ 600 ارب روپے ریلیف پیکج اور زرعی شعبے میں مراعات پر عملدرآمد شروع ہو گیا ۔چینی ، ادویات ، زرعی سیکٹر ، یوریا ، ڈی اے پی ، موبائل فون ، سیمنٹ اور مشروبات پر سیلز ٹیکس اور فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کی شرح میں کمی کا نفاذ جمعہ کو قائم مقام صدر میاں رضا ربانی کے فنانس بل 2016 پر دستخط کے آج سے نافذ العمل ہو گیا ۔ ایف بی آر کی جانب سے جاری کردہ نوٹفیکیشن کے مطابق زرعی ادویات پر لگے 7 فیصد لگے ٹیکس کو ختم کر دیا گیا ہے اسی طرح مقامی اور درآمدی ٹریکٹر پر سیلز کی ٹیکس کی شرح دس فیصد سے کم کر پانچ فیصد کر دی گئی ہے ۔
یوریا پر سیلز ٹیکس کی شرہ سترہ فیصد سے کم کر پانچ فیصد کر دی گئی ہے اس کمی سے پچاس کلو گرام کے یوریا کے بیگ کی قیمت 390 روپے ہو جائے گی ۔ چینی پر سیلز ٹیکس کی شرح 8 فیصد ہو گی حکومت اس سے قبل چینی پر 8 فیصد فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی وصول کر رہے تھی آج سے موبائل فون پر سیلز ٹیکس کی شرح میں اضافہ کیا گیا ہے ۔ بی کیٹگری کے موبائل فون کی قیمتوں میں ایک ہزار فی سیٹ کے حساب سے اضافہ ہو گیا ۔ اسی طرح اے کیٹگری بشمول سمارٹ فونز میں فی سیٹ 15 سو روپے اضافہ کیا گیا ۔اسی طرح مشروبات فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کی شرح 10.5 سے بڑھا کر 11.5 کر دی گئی ہے ۔ سیمنٹ کے 50 کلوگرام بیگ پر فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی ایک روپے کلو گرام بڑھائی گئی ہے ۔ اس سے قبل حکومت سیمنٹ پر پانچ فیصد ایف ای ڈی وصول کر رہی تھی ۔

Leave your vote

0 points
Upvote Downvote

Total votes: 0

Upvotes: 0

Upvotes percentage: 0.000000%

Downvotes: 0

Downvotes percentage: 0.000000%

اپنا تبصرہ بھیجیں