تحریک انصاف دہشت گردی اور انتہا پسندی کو فروغ دے رہی ہے،اے این پی

پشاور (پی ایف پی) عوامی نیشنل پارٹی کے سیکرٹری اطلاعات زاہد خان نے کہا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف خیبر پختونخوا میں دہشتگردی اور انتشار پسندی کو فروغ دے رہی ہے۔ پی ٹی آئی نے حقانیہ مدرسہ کو30کروڑ فنڈ دیا ہے جو ماضی میں دہشتگردوں کو تربیت دینے میں ملوث تھا۔ جمعرات کے روز عوامی نیشنل پارٹی کی جانب سے خیبرپختونخواہ کے بجٹ میں تھانیہ مدرسہ کے لئے 30کروڑ روپے مختص کرنے پر اپنا رد عمل جاری کرتے ہوئے کہا کہ اے این پی اس فیصلے کی سخت مذمت کرتی ہے اور اسے صوبے میں دہشتگردی کو فروغ حاصل ہو گا۔بجائے اس کے کہ فنڈز کو سائنس اور فنون کی ترقی کے لئے مختص کیا جائے پی ٹی آئی ایک ایسے ادارے کی مالی معاونت کر رہی ہے جس کے طالب علم انتشار پسند ی کی جانب راغب ہیں،صوبے میں دہشتگردی بڑھنے کا اندیشہ ہے ۔ اے این پی اس فیصلے کی سخت مخالفت کرتی ہے اور صوبائی اسمبلی میں بھی اس فیصلے کی مخالفت ہونی چاہیے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ اے این پی نے اپنے دور میں صوبے کے مختلف علاقوں میں یونیورسٹیاں اور کالجز بنائی جبکہ جماعت اسلامی اور پی ٹی آئی مدرسوں کے ایجنڈے کے لئے کام کر رہے ہیں ۔ ضرب عضب سے پہلے عمران خان ، مدرسہ حقانیہ کے سربراہ مولانا سمیع الحق اور پروفیسر ابراہیم حکومت میں شامل ہوتے ہوئے طالبان سے بات چیت پر معاہدہ کرنے کی حمایت کر رہے تھے اور آج ان کی مالی معاونت کر رہے ہیں۔ واضح رہے کہ پی ٹی آئی نے گزشتہ روز دارالعلوم حقانیہ کو رواں مالی سال کے صوبائی بجٹ میں دارالحکومت تھانیہ کو 30 کروڑ فنڈ دینے کا اعلان کیا تھا۔

Leave your vote

0 points
Upvote Downvote

Total votes: 0

Upvotes: 0

Upvotes percentage: 0.000000%

Downvotes: 0

Downvotes percentage: 0.000000%

اپنا تبصرہ بھیجیں