ایران میں غیر قانونی آلات کیخلاف کریک ڈاؤن شروع

اخلاقیات کو نقصان پہنچانے والے ایک لاکھ سیٹلائٹ ڈش اور ریسیورز تباہ کردیئے گئے

ان چینلز کی وجہ سے معاشرے میں طلاقیں، منشیات کی لت اور عدم تحفظ میں اضافہ ہورہا ہے، ناغدی

تہران( پی ایف پی ) ایران نے غیر قانونی آلات کے خلاف شروع کیے گئے ایک بڑے کریک ڈاؤن کے دوران ایک لاکھ سیٹلائٹ ڈش اور ریسیورز کو تباہ کردیا، جن کے حوالے سے حکام کا کہنا ہے کہ یہ اخلاقی طور پر نقصان دہ ہیں۔ غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق سیٹلائٹ ڈشوں کو دارالحکومت تہران میں ایران کی باسیج ملیشیاء کے سربراہ جنرل محمد رضا ناغدی کی موجودگی میں تباہ کیا گیا،
جنھوں نے ملک میں سیٹلائٹ ٹیلی ویڑن کے اثرات کے حوالے سے خبردار کیا تھا اور کہا کہ سچائی یہ ہے کہ زیادہ تر سیٹلائٹ چینلز معاشرے کی اخلاقی اقدار اور ثقافت کو نقصان پہنچارہے ہیں’۔ناغدی کا کہنا تھا کہ ‘ان چینلز کی وجہ سے معاشرے میں طلاقیں، منشیات کی لت اور عدم تحفظ میں اضافہ ہورہا ہے’۔
ساتھ ہی ان کا کہنا تھا کہ ‘تقریباً ایک ملین ایرانیوں نے پہلے ہی اپنے سیٹلائٹ ڈش اور ریسیورز رضاکارانہ طور پر حکام کے حوالے کردیئے ہیں’۔واضح رہے کہ ایرانی قوانین کے مطابق سیلائٹ کے سازوسامان پر پابندی عائد ہے اور جو کوئی بھی ان کی تقسیم، استعمال یا مرمت میں ملوث پایا گیا، اس پر 2 ہزار 8 سو ڈالر جرمانہ عائد کیا جاسکتا ہے۔
ایرانی پولیس باقاعدگی سے مختلف علاقوں میں چھاپے مار کر چھتوں پر لگائے گئے یہ سیٹلائٹ ڈش ضبط کرتی رہتی ہے۔ایران کے وزیر ثقافت علی جنتی نے گذشتہ ہفتے اس قانون کے جائزے پر زور دیتے ہوئے کہا، ‘اس قانون کے ازسر نو جائزے کی اشد ضرورت ہے کیونکہ پابندی ہونے کے باوجود بھی زیادہ تر ایرانی سیٹلائٹ ڈشز کا استعمال کرتے ہیں، جس کا مطلب ہے کہ 70 فیصد ایرانی قانون کی خلاف ورزی کرتے ہیں’

Leave your vote

0 points
Upvote Downvote

Total votes: 0

Upvotes: 0

Upvotes percentage: 0.000000%

Downvotes: 0

Downvotes percentage: 0.000000%

اپنا تبصرہ بھیجیں