آصف زرداری اورفریال تالپور پر بیرون ملک جانے پر پابندی

اسلام آباد(پی ایف پی)وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) نے سابق صدر اور پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپور پر ملک سے باہر جانے پر پابندی عائد کردی۔

ذرائع کے مطابق 29 مشتبہ بینک اکاؤنٹس کے ذریعے 35 ارب روپے بیرون ملک بھجوانے کے زیر سماعت کیس کے سلسلے میں ایف آئی اے نے پابندی عدالتی ہدایات کی روشنی میں عائد کی جس کے بعد تمام زمینی اور فضائی امیگریشن پوائنٹس پر ایف آئی اے حکام کو آگاہ کردیا گیا۔

ذرائع نے بتایا کہ ملزمان کے نام عبوری قومی شناختی فہرست میں ڈالے گئے ہیں اور فہرست میں شامل افراد 30 دن کے لیے بیرون ملک نہیں جاسکتے۔

ایف آئی اے 30 دن کی مدت ختم ہونے کےبعد نام دوبارہ بھی اس فہرست میں ڈال سکتی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ملزمان کے نام ایڈیشنل ڈی جی ایف آئی اے امیگریشن واجد ضیاء کے حکم پر اس فہر ست میں شامل کیے گئے ہیں۔

واضح رہے کہ ایف آئی اے نے گزشتہ دنوں اسی کیس میں سابق صدر کے قریبی ساتھی حسین لوائی کو بھی گرفتار کیا تھا۔

دوسری جانب کیس میں آصف علی زرداری اور فریال تالپور کو 12 جولائی کو سپریم کورٹ میں طلب کرلیا گیا، عدالت عظمٰی نے ازخود نوٹس کیس میں تحریری حکم جاری کردیا۔

سپریم کورٹ کے حکم میں ان ناموں کی تفصیل شامل ہے جن کے جعلی اکاؤنٹ کھولے گئے۔ جن کے نام پر جعلی اکاؤنٹ کھولے گئے ان میں طارق سلطان، ارم عقیل، محمداشرف، اقبال آرائیں، محمد عمیر، عدنان جاوید اور قاسم علی کے نام بھی شامل ہیں۔

تحریری حکم میں اکاؤنٹس میں رقم جمع کرانے والی 15 کمپنیوں/ کاروباری گروپس کے نام بھی شامل ہیں۔ ان میں سجوال ایگرو فارم، ٹنڈوالہ یار شوگر ملز، ایگرو فارم ٹھٹھہ، عمیر ایسوسی ایٹس، رائل انٹرنیشنل، اقبال میٹلز، لاجسٹک ٹریڈنگ، لکی انٹرنیشنل، اے ون انٹر نیشنل، سردار محمد اشرف، حاجی مرید اکبر،اومنی گروپ و دیگر شامل ہیں۔

تحریری حکم میں اکاؤنٹس سے فائدہ اٹھانے والے 13 گروپس کے نام بھی شامل ہیں جن میں نصیرعبداللہ لوٹھا، انصاری شوگر ملز، اومنی پولیمار پیکجز، پاکستان ایتھنل، چیمبر شوگر ملز، ایگرو فارمز ٹھٹھہ شامل ہیں۔

آصف زرداری، فریال تالپور، پرتھینم ،اے ون انٹرنیشنل، لکی انٹرنیشنل، لاجسٹک ٹریڈنگ، رائل انٹرنیشنل اور عمیر ایسوسی ایٹس بھی فائدہ اٹھانے والوں میں شامل ہیں۔

سپریم کورٹ نے اپنے تحریری حکم میں فوجداری مقدمات دائر ہونے والوں کے نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) پر ڈالنے کی ہدایت کی ہے۔

سپریم کورٹ نے انور مجید، عبدالغنی مجید، اسلم مسعود، عارف خان، نورین سلطان، کرن امان، نصیرعبداللہ لوٹھا، محمد اقبال خان نوری، محمد اشرف، محمد اقبال آرائیں، محمد عمیر، عدنان جاوید، قاسم علی اور اعظم وزیر خان کا نام بھی ای سی ایل پر ڈالنے کا حکم دیا ہے۔

یونائٹیڈ بینک، سمٹ بینک اور سندھ بینک کے سی ای اوز اور صدور کو پیش کرنے کا حکم دیا گیا ہے جبکہ سندھ ہائی کورٹ میں زیر سماعت 6 مقدمات کا ریکارڈ بھی طلب کرلیا گیا ہے۔

سپریم کورٹ نے اپنے تحریری حکم میں سمٹ بینک کے اسٹیٹ بینک کے پاس جمع 7 ارب روپے منجمد کرنے کا بھی حکم دیا ہے جبکہ انسپکٹر جنرل سندھ پولیس کو تمام افراد کو عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔

Leave your vote

0 points
Upvote Downvote

Total votes: 0

Upvotes: 0

Upvotes percentage: 0.000000%

Downvotes: 0

Downvotes percentage: 0.000000%

اپنا تبصرہ بھیجیں